گنا اور چقندر دو قسم کی فصلیں ہیں جس سے ہم چینی بناتے ہیں۔ ہم "المعیز انڈیسٹریز لیمٹیڈ" نہ صرف اعلی قسم کی چینی بناتے ہیں بلکہ اپنے تمام شرکائے مفادات کے ساتھ پائیدار تعلقات قائم کرنے میں یقین رکھتے ہیں۔ روایتی ملنگ کی بجائے ہم نے المعیز میں ڈی فیوز ٹیکنالوجی کو رواج دیا ہے، یہ ڈی فیوزر گنے اور چقندر سے جوس نکالنے کے لیے زیر استعمال ہے۔ ہمارے پوسٹ ڈی فیوزر کرشنگ یونٹس کی بنیاد جدید ٹیکنالوجی پر ہے ہم خودکار ملنگ ٹرالی مل میکس کرشنگ ٹیکنالوجی سے لیس ہیں جو جدید فرانسسی ڈیزائن کے مطابق تیار شدہ ہے۔

المعیز میں جوس کی تقطیر ارو شفافیت کا کام بین الاقوامی طریقہ کار اور معیار کے مطابق کیا جاتا ہے۔ پراسنگ کے لیے بہترین کوالٹی کے کیمیکل کے انتخاب اور استعمال پر توجہ مرکوز کی جاتی ہے۔ حکمت عملی کے مطابق تمام کیمیکل فوڈ گریڈبین الاقوامی معیار اور صارفین کی ظرورت کے مطابق یقینی بنائے جاتے ہیں۔

المعیز جدید ترین "فالنگ فلم ایوپوریسٹر" کی تنصیب کے بانی ہیں یہ روایتی روبوٹ کے مقابلے میں زیادہ متحرک ہے یہ حرارت کو بھاپ سے جوس تک بے حد متحرک طریقے سے پہنچاتے ہیں اور پراسس کے لیے بھاپ کی طلب میں خاطر خواہ کمی کا موجب ہیں۔ اس طرح پراسس میں بھاپ کی کھپت کم ہو جاتی ہے اور اس طرح بگاس پاور جنریشن کے لیے زیادہ بچ جاتا ہے۔

چینی کی قلمیں تیار کرنے کے کڑاہوں کے مقام پر قلماوٰ کا عمل سر انجام پاتا ہے۔ بہترین ہدف کے حصول میں خودکار قلماوٰ کے نظام نے المعیز کی خوب اعانت کی ہے۔ کڑاہوں میں اُبلنے کے عمل پر خاص توجہ مرکوز کی جاتی ہے کیونکہ اس کے مطابق ہی چینی کی قسم تیار ہوتی ہے کمپنی متنوع اقسام کی چینی تیار کرتی ہے اس سلسلہ میں پیداوار حدود زیر ۴۵ آئی سی ایم ایس اے سے لے کر زیرِ ۱۰۰ آئی سی یو ایم ایس اے کے درمیان ہیں۔

کڑاہوں کے نظام کی کارکردگی عمدہ چینی کی تیاری کے لیے انتہائی طاقتور طریقہ ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہماری نگاہوں کا محور کڑاہوں کا پین اسٹیشن خودکار نظام ہی ہے۔ خود کار کڑاہوں کے پین اسٹیشن نظام بڑے پیمانے پر بوائلنگ کے نظام کو موثر بنا دیا ہے۔ بوائلنگ آف سٹرئیک نے تواتر سے مخصوص برکس کے ساتھ بڑے پیمانے پر کوالٹی کی بہتری کا سامان کر دیا ہے۔ چینی کے قلماوٰ اور تیاری اور پیداوار بہتر طور پر زیرِ کنٹرول ہو گئ۔ ایسے طریقے اپنائے گئے ہیں جو بوائلنگ کی مانیٹرنگ معلوماتی اعدادوشمار اور پین اسٹیشن کی کارکردگی کا امتحان یقینی بناتے ہیں خود کار پین کا نظام مشہور جرمن ماہرین کی زیرنگرانی المعیز انڈیسٹریز لیمٹیڈ روبہ عمل لانے میں ظفریاب رہی۔

ہم نے جدید ترین ویکیوم اور کنڈینسنگ نظام کی تنصیب کی ہے سویڈن، جاپان اور چین سے جدیدترین سینٹریفیوگل مشین درآمد کی ہیں۔ آہنی میٹریل سے ہونے والی آلودگی سے بچنے کے لیے شوگر ہوپرز، ڈرائرز، گریڈرز اور ایلی ویٹر اس طرح ڈیزائن کیے گئے ہیں تا کہ آلودگی کی روک تھام ہو سکے۔ آہنی اشیا کو الگ کرنے کے لیے طاقتور مقناطیس بھی نصب کیا گیا ہے۔ شوگر کی پیکنگ کے نظام میں تسلسل و بہتری یقینی بنانے کے لیے چینی کی بھرائی، ٹانکے کے زریعے پیکنگ اور پیک شدہ چینی گودام تک پہنچانے کے لیے جدید ترین شوگر پیکنگ کی تکنیک زیر استعمال ہے۔

ڈسٹری بیوشن کنٹرول سسٹم ڈی سی ایس پلانٹ کی مانیٹرنگ کوالٹی اور متحرک آپریشن کے لیے مسلسل جاری ہے۔ سینٹرل کنٹرول سسٹم ہی زیادہ تر امور کو کنٹرول کرتا ہے۔ پلانٹ کے تقریباً ہر حصہ میں خودکار کنٹرول کا نظام موجود ہے۔

گنے کی پیداوار کے علاوہ چینی پیدا کرنے والے چقندر کے لیے المعیز نے الگ نظام تشکیل دیا ہے اس لائن کی بنیاد ٹیکنالوجی کے فن جدید آلات جیسا کہ ڈرم واشر، سٹون کیچر، جڑی بوٹیاں نوک دار کانٹے الگ کرنا، جیٹ واشر اور سلائسر کترن بنانے والا آلہ پر ہے۔

المعیز اپنے اردگرد میں بسنے والوں کی بہبود کے لیے بجلی، ماحول کی بہتری جیسے کاموں میں دلچسپی سے کام کرتی ہے المعیز بگاس کو توانائی کی پیداوار کے لیے استعمال کر رہی ہے جو فرنس آئل کی نسبت کم قیمت اور زیادہ موثر ہے۔

المعیز انڈیسٹریز لیمٹیڈ زیادہ حرارت زدہ بھاپ ہائی پریشر بوائلرز ۳۳۳ سے پیدا کرتی ہے ۲۳ بار بوائلرز جو روایتی طور پر استعمال میں ہیں کے بالمقابل یہ بوائلر زیادہ اعلی کارکردگی کا مظہر ہیں اِن بوائلر کی بنیاد جدید ترین ڈیزائنEckrohrkessel GmbH ہے۔

اِن تکنیکس اور اعلی کارکردگی کے حامل بوائلرز، ٹربائنز اور جنریٹرز کی بدولت ہم اضافی بجلی پیدا کر رہے ہیں جو کہ قریبی قومی گرڈ اسٹیشن کے لیے ہر سیزن میں دستیاب رہتی ہے۔

زرعی تحقیق اور ترقی ہماری پالیسی کا لازمی جزو ہے جو نہ صرف متنوع اقسام کی فصلوں کی نشاندہی کرتی ہے بلکہ آبپاشی نامیاتی کھادوں جڑی بوٹیاں اور کیڑے مکوڑے ختم کرنے اُن کی جانچ پرکھ پیداوار بڑھانے کے زرعی اصولوں کے نفاز مٹی کی زرخیزی اور غزائی اجزا کے طور پر فلٹر کیک کی ظرورت اور عمومی نوعیت کی پیداوار کو کئی گُنا بڑھانے کا کام سر انجام دیتی ہے۔

گنے اور چقندر کی بڑھوتی کے لیے فارم کی سہولت استعمال کی جاتی ہے۔ ایسی تحقیق تحقیقی مراکز یا سمندر پار ہمارے شریک کار زرعی آب و ہوا اور علاقے کے مطابق اپنانے کے لیے سامنے لاتے ہیں۔ تصدیق اور پیداوار کے ٹیسٹ کے بہتر اور متنوع نتیجہ کے بعد پرانے بیج کی جگہ اچھی اور جدید فصل کے لیے یہ کسانوں میں عام جاری و ساری ہو جاتے ہیں۔

جب چقندر کی جڑوں سے جوس نکال لیا جاتا ہے جو مواد بچ جاتا ہے اُسے چقندر کا گودا کہتے ہیں جو دنیا بھر میں حیوانات کی خوراک کے طور پر استعمال ہوتا ہے۔ یہ گودا حیوانات کو صحت مند بناتا ہے خاص طور پر دودھ دینے والے حیوانات کی دودھ کی پیداوار بڑھاتا ہے۔ چقندرکا گودا زخیرہ بنا کر اچھے طریقے سے سٹاک کر لیا جاتا ہے جو تمام سال متبادل چارے کے طور پر دستیاب رہتا ہے۔ اِسے گندم، جو، الف یا کسی بھی چارے کے ساتھ ملا کر استعمال کیا جا سکتا ہے۔

چقندر کے گودے کے اہم اجزا
اجزا فی صد
قدرتی ریشہ 37%
توانائی (MJ/Kg/DM) 13%
پروٹین 9.4%
چینی 6%
کیلشیم 0.8%
تیل 0.7%
فاسفورس 0.5%
چقندر کے گودے کی غزائی اہمیت

چقندر کے گودے میں قدرتی ریشوں کی وافر فی صد مقدار پائی جاتی ہے علاوہ ازیں اِس میں پروٹین، نمکیات اور شکر بھی موجود ہیں۔ وافر مقدار میں جلد ہضم ہو جانے والے قدرتی ریشے جو توانائی سے پُر ہیں کی موجودگی نے اِسے پاکستان میں ڈیری فارمز حیوانات کی ارزاں خوراک کے طور پر متعارف کیا ہے۔

چقندر کے گودے کو کیسے محفوظ و مامون رکھا جاتا

چقندر کے گودے کو محفوظ کرنے کے لیے چقندر کے گودے کے گودام لازمی ہیں۔ چقندر کا گودا اِن گوداموں میں محفوظ کرنے سے پہلے زمین پر پلاسٹک کی شیٹ بچھانا لازمی ہے۔ گودام کو چقندر کے گودے سے بھر دینے کے بعد اوپر بھی پلاسٹک شیٹ سے کور کردینا چاہیے اِس بات کو یقینی بنائیں کہ گودا تک ہوا نہ پہنچ پائے۔ یہ گودے کو محفوظ اور سلامت رکھنے میں مددگار ہو گا۔

اوپر کی طرف واپس
Loading